چیتے کے حملے میں بچی کی ہلاکت کیخلاف احتجاج رنگ لایا، انتظامیہ معاوضہ دینے اور تادیبی اقدامات کرنے پر راضی ہو گئی۔

ایبٹ آباد (بیورورپورٹ) باغ بانڈی میں جنگلی چیتے کے حملے میں ایک بچی کی ہلاکت اور اس کے دادا کے زخمی ہونے کے خلاف احتجاج رنگ لایا، RAZAQ ABASI ONEانتظامیہ متاثرہ خاندان کو معاوضہ دینے اور زخمی بزرگ کا مفت علاج کرانے پر راضی، محمکہ جنگلی حیات کے اہلکاروں کے خلاف کارروائی اور عوام کے تحفظ کے لئے اقدامات کرنے کی بھی یقین دہانی کرا دی۔ تفصیلات کے مطابق گلیات کے علاقہ باغ بانڈی (بانڈی میرا) میں جنگلی چیتے کے راہگیروں پر حملے میں ایک بچی کی ہلاکت اور اس کے دادا کے زخمی ہونے کے خلاف مقامی افراد کا احتجاج رنگ لایا۔ مقامی لوگ جماعت اسلامی ضلع ایبٹ آبادکے امیر عبدالرزاق عباسی کی قیادت میں سراپا احتجاج بن گئے۔ جس کے بعد مقامی انتظامیہ نے مظاہرین کے رہنماؤں کے ساتھ مزاکرات کئے اور ان کے بیشتر مطالبات مان لئے۔ عبدالرزاق عباسی کی قیادت میں مقامی لوگوں کے ساتھ ہونے والے مزاکرات کے بعد انتظامیہ متاثرہ خاندان کو معاوضہ دینے اور محمکہ جنگلی حیات (وائلڈ لائف) کے اہکاروں کے خلاف انکوائری کر کے تادیبی کارروائی کرنے پر راضی ہو گئی۔ انتظامیہ بچی کے والدین کو معاوضہ دے گی اور زخمی بزرگ کا مفت علاج کرایا جائے گا۔ اس کے علاوہ عوامی جگہوں اور آبادیوں کے قریب موجود جنگلی جانوروں اور درندوں کو مارنے ، اور چیتوں کو پکڑ کر پنجروں میں بند کرنے کےعوامی مطالبات بھی مان لئے گئے ہیں۔عوامی مطالبات منوانے میں جماعت اسلامی ضلع ایبٹ آباد کے امیر عبدالرزاق عباسی نے مرکزی کردار ادا کیا جس پر علاقہ گلیات کے عوامی و سیاسی حلقوں نے ان کو خراج تحسین پیش کیا ہے۔

Related posts

Leave a Comment