جی ڈی اے, نئے قانون کے تحت اتھارٹی ون میں شوبن جائے گی، آمنہ سردار

ایبٹ آباد (نمائندہ گلیات ٹائمز) جی ڈی اے کے نئے قانون کے تحت اتھارٹی ون میں شوبن جائے گی، زیادہ اختیارات غیر سرکاری ارکان خاص طور پر چئیرمین کے پاس ہوں گے۔ اس سازش کے پس پشت کون ہے یہ کھلا راز ہے جسے ہر کوئی جانتا ہے۔ ان خیالات کے اظہار مسلم لیگ نواز کی رکن صوبائی اسمبلی آمنہ سردار نے گلیات ٹائمز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ انہیں نئے قانون پر کئی اعتراضات ہیں، اتھارٹی کا اختیار نجی یا غیر سرکاری ارکان کے ہاتھوں میں نہیں ہونا چائیے بلکہ یہ حکومتی ادارہ ہی رہنا چائیے مزید نجی ارکان میں مقامی لوگوں اور سٹیک ہولڈرز کی نمائندگی ہونی چائیے۔ آمنہ سردار نے کہا کہ نیا قانون جی ڈی اے کی نجکاری کرنے کے مترادف ہے جس کے تحت ادارے کا کنٹرول حکومت کی بجائے غیر سرکاری شعبے سے متعلقہ افراد کے ہاتھوں میں ہو گا۔ اتھارٹی میں ملک کے دوسرے علاقوں اور صوبوں کے لوگ شامل ہو سکتے ہیں مگر مقامی افراد کی نمائندگی کو قطعی طور پر نظر انداز کیا گیاہے، اتھارٹی کو بہت زیادہ اختیارات دئے گئے ہیں جن کا غلط استعمال ممکن ہے اس بنا پر علاقہ کے عوام میں شدید بے چینی اور تشویش کی ہر پائی جاتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اتھارٹی کے اختیارات دراصل چند نجی ارکان بالخصوص چئیرمین، جو لازمی طور پر غیر سرکاری شعبے سے ہوگا، کے پاس ہوں گے جن کا من مانے انداز میں استعمال کے امکان کو رد نہیں کیا جا سکتا۔ انہوں نے کہا کہ اس سارے عمل کے پس پشت شخصیت کو ہر کوئی جانتا ہے افسوسناک بات یہ ہے کہ اس سارے عمل میں علاقہ سے منتخب رکن اسمبلی ان کے آلہءکار بنے ہوئے ہیں۔ آمنہ سردار نے کہا کہ انہوں نے گلیات کے عوام کی امنگوں کی ترجمانی اور علاقہ کے مفادات کے تحفظ کے لئے صوبائی اسمبلی میں آواز اٹھائی تھی مگر حکمران جماعت نے اس پر کان نہیں دھرے اوراپنی عددی اکثریت کے زعم میں عوام دشمن قانون منظور کرلیا جس کے خلاف علاقہ گلیات کے لوگ آج سراپا احتجاج ہیں۔ جی ڈی اے کے نئے قانون کے تحت اتھارٹی ون میں شوبن جائے گی

Related posts

Leave a Comment