گلیات کے گرینڈ عوامی جرگے نے جی ڈی اے ایکٹ 2016 مسترد کر دیا، احتجاجی تحریک چلانے کی دھمکی

ایبٹ آباد ( نمائندہ گلیات ٹائمز) گلیات کے گرینڈ عوامی جرگے نے جی ڈی اے کا نیاقانون مسترد کر دیا۔ عوام کو اعتماد میں نہ لینے کی صورت میں احتجانی تحریک چلانے کی دھمکی۔ تفصیلات کے مطابق جی ڈی اے ایکٹ 2016 پر غور اور مشاورت کے لئے گلیات کے عوام، سیاسی و سماجی رہنماؤں،دانشوروں اور تاجروں کے نمائندوں پر مشتمل گرینڈ جرگہ ضلع کونسل ایبٹ آباد میں ہوا، گرینڈ جرگہ ضلع ناظم ایبٹ آباد سردار شیر بہادر خان نے بلایا تھا، جس میں علاقہ کی تمام سیاسی جماعتوں کے سرکردہ رہنماؤں اور منتخب بلدیاتی اراکین نے شرکت کی، جرگہ سے ضلع ناظم ایبٹ آباد سردار شیر بہادر خان، جماعت اسلامی ایبٹ آباد کے امیر عبدالرزاق عباسی، گلیات کی یونین کونسل نتھیاگلی سےرکن ضلع کونسل سردارراحیل، یونین کونسل سیر سے رکن ضلع کونسل طاہر جاوید عباسی کے علاوہ دیگر ارکان ضلع و تحصیل کونسل، ویلج کونسلوں کے ارکان اور ناظمین نے خطاب کیا۔ گرینڈ جرگہ کہ شرکاء نے جی ڈی اے کے نئے قانون کو علاقہ گلیات اور اس کے عوام کے ساتھ سنگین ظلم اور زیادتی قرار دیتے ہوئے اسے مسترد کر دیا۔ گرینڈ جرگہ کے شرکاء نے کہا کہ صوبائی حکومت نے عددی برتری کے سہارے ایک غیر سیاسی اور غیر جمہوری قانون بنا کر عوام اور جمہوریت دشمنی کا ثبوت دیا ہے۔ شرکاء نے کہا کہ یہ قانون حکمرانوں کی کاروباری اور آمرانہ سوچ کی عکاسی کرتاہے، جو گلیات کے عوام پر ان کی مرضی و منشا کے بغیر مسلط کیاگیا ہے، شرکاء نے کہا کہ عوامی مشاورت کے بغیر کی گئی قانون سازی قابل مذمت ہے اگر کوئی فیصلہ یا قانون زبردستی مسلط کرنے کی کوشش کی گئی تو بھرپورعوامی و احتجاجی تحریک چلائیں گے۔ جرگے کے شرکاء نے جی ڈی اے ایکٹ 2016 کی کئی شقوں پر شدید تحفظات کااظہار کرتے ہوئے اس کو کلی طور پر مسترد کردیااور عوامی امنگوں اور علاقہ کے مفادات کے خلاف کام کرنے پر گلیات سے منتخب رکن صوبائی اسمبلی سردار محمد ادریس کے کردار پر سخت تنقید کی اور کہا کہ انہوں نے اپنے ذاتی مفاد اور لالچ میں گلیات اور اس کے عوام کو بیچ ڈالا ہے اس موقع پر گرینڈ جرگہ کے میزبان اور ضلع ناظم ایبٹ آباد سردار شیر بہادر خان نے کہا کہ جی ڈی اے ایکٹ گلیات کے عوام کے حقوق پر ڈاکہ ڈالنے کی کوشش ہے اس ایکٹ کے تحت گلیات کے وسائل چند غیر سرکاری افراد کے ہاتھوں میں چلے جائیں گے، جو ایسی لوٹ مار مچائیں گے کہ لوگ ایسٹ انڈیا کمپنی کو بھی بھول جائیں گے۔ انہوں نے مطالبہ کہ گلیات اور ایبٹ آباد کے دیگر علاقوں سے متعلق قانون سازی میں مقامی لوگوں اور ان کے منتخب کردہ بلدیاتی ارکان اور ضلعی حکومت کے ساتھ مشاورت کی جائے اگر عوامی امنگوں کے برخلاف اور ان کی مشاورت کے بغیر کوئی فیصلہ یا قانون ان پر مسلط کرنے کی کوشش کی گئی تو عوام بھرپور سیاسی ردعمل کا اظہارکریں گے، انہوں نے کہا کہ وہ ہر قیمت پر مقامی افراد کے حقوق کا تحفظ کریں گے اور اس سلسلہ میں کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت ہوش کے ناخن لے ورنہ گلیات اور ہزارہ کے لوگ اس کے ہوش ٹھکانے پر لے آئیں گے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ عوامی مشاورت اور مقامی باشندوں کے تحفظات دور کرنے کے بعد نیا قانون نافذ کیا جائے۔ اس موقع پر جماعت اسلامی ضلع ایبٹ آباد کے امیر عبدالرزاق عباسی نے کہا کہ عمران خان اپنے دوستوں کی ایما پر گلیات کے عوام کو ان کے جائز حقوق اور قدرتی وسائل سے محروم کرنا چاہتے ہیں، انہوں نے کہا جی ڈی اے کا نیا قانون گلیات کو جہانگیر ترین جیسے لوگوں کے ہاتھ میں اونے پونے داموں فروخت کرنے کے لئے بنایا گیا ہے مگر گلیات کے عوام اور تمام سیاسی جماعتوں کے قائدین یک آواز ہو کراس قانون کو مسترد کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا اس قانون کو منظور کرانے میں علاقہ گلیات کے ایک ایم پی اے نے گھناؤنا کردارادا کیا ہے جو اپنے ذاتی مفادات کی خاطر اپنےعوام اور علاقہ سے دشمنی کر رہے ہیں مگر گلیات کے لوگ انہیں اچھی طرح پہچان گئے ہیں اور اب انہیں کسی صورت معاف نہیں کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ گلیات کے عوام کے حقوق پر ڈاکہ ڈالنے اور ان کے وسائل کو لوٹنے کی سازش کو کسی صورت کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان گلیات اور اس کے بیش قیمت وسائل کو اپنے ان کاروباری دوستوں کے حوالے کرنا چاہتے ہیں جوصرف موسم گرما میں گلیات کی سیر کرنے آتے ہیں مگر علاقہ کے عوام کو یہ فیصلہ کسی صورت قبول نہیں۔ اگرجی ڈی اے کے نئے قانون کو زبردستی نافذکرنے کی کوشش کی گئی تو بھرپور احتجاجی تحریک چلائیں گے۔

Related posts

Leave a Comment